62

کوئٹہ دھماکا خودکش تھا، حملہ آور گاڑی میں موجود تھا، سی ٹی ڈی

کوئٹہ دھماکا خودکش تھا، حملہ آور گاڑی میں موجود تھا، سی ٹی ڈی

ترجمان سی ٹی ڈی کا کہنا ہے کہ شواہد کے مطابق ہوٹل میں دھماکا خودکش تھا، دھماکے کے وقت خودکش حملہ آور گاڑی میں موجود تھا۔

سی ٹی ڈی ترجمان نے بتایا کہ کوئٹہ میں گزشتہ رات ہوٹل میں ہوئے دھماکے کی تحقیقات جاری ہے اور یہ بات سامنے آئی ہے کہ یہ خودکش تھا، تاہم دھماکا خیز مواد کی نوعیت کا معلوم کیا جا رہا ہے۔

دوسری جانب کوئٹہ ہوٹل پارکنگ دھماکے میں جاں بحق 2 افراد کی نمازجنازہ ادا کردی گئی ہے، ہوٹل کے شفٹ مینیجرشاہ زیب اور ایمل کاسی کی نماز جنازہ کاسی قبرستان میں ادا کی گئی جس کے بعد دونوں افراد کو کاسی قبرستان میں سپرد خاک کیا گیا، نماز جنازہ اور تدفین میں لوگوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔

واضح رہے کہ دھماکے میں شاہ زیب اور ایمل کاسی سمیت 5 افراد جاں بحق ہوئے تھے، شاہ زیب اور ایمل کاسی دوست تھے اور ایمل کاسی شاہ زیب سے ملنے ہوٹل گئے تھے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں