18

ماضی میں پانی کی بچت کے لئے کراچی میں کوئی منصوبہ تشکیل نہیں دیا گیا، عارف علوی

صدر مملکت عارف علوی نے کہا ہے کہ افسوس ہے ماضی میں پانی کی بچت کے لئے کراچی میں کوئی منصوبہ تشکیل نہیں دیا گیا۔

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کی زیر صدارت گورنر ہاؤس کراچی میں اعلیٰ سطح کا اجلاس ہوا۔ اجلاس میں کراچی شہر کے بنیادی ڈھانچے سے متعلق مسائل کے حل کے لئے کراچی ٹرانسفارمیشن پلان پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

اجلاس میں کورونا کی نئی لہر کی وجہ سے کورونا کے بڑھتے ہوئے کیسز پر بھی گفتگو کی گئی۔

صدر مملکت نے کہا کہ پاکستان کی ترقی اور خوشحالی کراچی کی ترقی سے وابستہ ہے، اہلِ کراچی کی حالت زار کو مزید نظرانداز نہیں کیا جاسکتا، وفاقی حکومت کراچی کے مسائل کے حل کے لئے اپنا بھر پور کردار ادا کررہی ہے۔

عارف علوی نے کہا کہ کراچی میں پانی کی بچت اور محتاط استعمال کی ضرورت ہے، افسوس ہے کہ ماضی میں پانی کی بچت کے لئے کراچی میں کوئی منصوبہ تشکیل نہیں دیا گیا۔

گورنر سندھ نے صدر کو کراچی میں پینے کے صاف پانی، سیوریج، ٹھوس کچرے کے انتظام، نقل و حمل سے متعلق مسائل اور وفاقی حکومت کے اقدامات پر بریفنگ دی۔

اسد عمر نے کہا کہ مُلک میں کورونا کی چوتھی لہر کی واضح علامات ظاہر ہورہی ہیں، ملک میں کورونا ایس او پیز پر عمل نہ کرنے اور وائرس کی بھارتی قسم کی وجہ سے کورونا مریضوں کی تعداد بڑھ رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ عوام جلد سے جلد اپنے آپ کو کورونا سے بچاؤ کے حفاظتی ٹیکے لگوائیں۔

صدر مملکت نے کہا کہ عوام وائرس کے پھیلاؤ کی روک تھام کے لئے این سی او سی کی ہدایات پر عمل کریں۔ موثر فیصلہ سازی سے پاکستان دوسرے ممالک کے برعکس سنگین صورتحال سے محفوظ رہا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں