39

بھٹو کی 42ویں برسی پر سابق ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر جنرل خواجہ ظہیر کے انکشافات

ذوالفقار علی بھٹو کیس کے وعدہ معاف گواہ مسعود محمود کا بیان ریکارڈ کروانے کا حکم دینے والے سابق ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر جنرل خواجہ ظہیر  نے اہم انکشاف کیے ہیں۔

خواجہ ظہیر کا کہنا ہے کہ ذوالفقار علی بھٹو کے خلاف کیس میں وعدہ معاف گواہ کے پہلے اعترافی بیان میں بھٹو پر قتل کا کوئی الزام نہیں تھا۔

جیو نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ گواہ کے دو بیانات لیے گئے مگر بھٹو کے وکلا نے اس قانونی سقم کا فائدہ نہ اٹھایا۔

 جیو نیوز کے نمائندے اعزاز سید سے گفتگو کرتے ہوئے خواجہ ظہیر کا کہنا تھا کہ بھٹو کے قتل کی ذمہ داری اس وقت کی حکومت پر عائد ہوتی ہے مگر اس میں بھٹو کے وکلا کی نااہلی بھی شامل ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں