21

روم میں نئے فاشسٹوں کے خلاف بڑے پیمانے پر عوامی مظاہرے

مظاہرین نے بینرز اٹھا رکھے تھے، جن پر فاشزم، دوبارہ کبھی نہیں جیسے نعرے لکھے ہوئے تھے

روم(انٹرنیشنل ڈیسک) اطالوی دارالحکومت روم میں پچاس ہزار سے زائد افراد نے ملک میں نئے فاشسٹ عناصر کے خلاف مظاہرے کیے اور انتہا پسند پارٹی فورسا نووا پر پابندی عائد کیے جانے کا مطالبہ کیاہے ۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق ان مظاہروں کے منتظمین نے بتایاکہ شرکا کی تعداد تقریبا دو لاکھ رہی۔
مظاہرین نے ایسے بینرز اٹھا رکھے تھے، جن پر فاشزم، دوبارہ کبھی نہیں جیسے نعرے لکھے ہوئے تھے۔

ایک ہفتہ قبل فورسا نووا نامی پارٹی کے اراکین نے اپنے دفاتر میں یا کام کی جگہوں پر کورونا وائرس کی وبا کے باعث پابندیوں میں توسیع کے خلاف پرامن احتجاج کے بعد ملکی ٹریڈ یونین فیڈریشن CGIL کے صدر دفتر پر حملہ کر دیا تھا۔ اس حملے کے بعد پولیس نے کئی حملہ آوروں کو گرفتار کر لیا تھا، جن میں اس پارٹی کے سرکردہ نمائندے بھی شامل تھے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں