29

شادی کے اسٹیج پر دلہے کی ماں کے ہاتھوں چپل سے پٹائی، ویڈی وائرل

اترپردیش میڈیا ڈسک) شادی کا دن کسی بھی جوڑے کے لیے انتہائی خوبصورت اور یادگار دن ہوتا ہے، لیکن اگر اِسی دن اگر والدہ کی جانب سے دلہے کو تشدد کا نشانہ بنا دیا جائے تو اس سے زیادہ قابل افسوس بات کیا ہو سکتی ہے۔ ایسا ہی ایک افسوسناک واقعہ بھارت میں پیش ا?یا، جہاں شادی کا خوبصورت دن دلہے کیلئے ڈراو?نا خواب بن گیا، دلہے کو اپنی ہی ماں نے سینکڑوں مہمانوں کے سامنے چپلوں سے تشدد کا نشانہ بنا ڈالا۔
اس واقعے کی ویڈیو بھارت اور پاکستان سمیت دنیا بھر میں وائر ل ہو گئی ہے۔ بھارتی میڈیا کی ایک رپورٹ کے مطابق یہ واقعہ بھارتی ریاست اترپردیش کے ایک گاو?ں میں دلہا دلہن کی اسٹیج پر ایک دوسرے کو ہار پہنانے کی تقریب کے دوران پیش ا?یا۔ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ دلہا دلہن ایک خوبصورت سن فلاور اسٹائل میں تیار کیے گئے اسٹیج پر ایک دوسرے کو ہار پہنانے میں مصروف تھے کہ اچانک دلہے کی ماں نے اسٹیج پر چڑھ کر پہلے توڑ پھوڑ کی اور پھر چپل اتار کر دلہے بنے بیٹے کو مہمانوں کے سامنے مارنا شروع کر دیا۔

شادی میں شریک چند مہمانوں نے ا?گے بڑھ کر خاتون کو زبردستی اسٹیج سے اتارا، بعد ازاں ویڈیو میں خاتون کو شادی کی تقریب سے جاتے دیکھا جاسکتا ہے۔بھارتی میڈیا رپورٹ کے مطابق والدہ کی دلہا بنے بیٹے پر تشدد کی اصل وجہ سامنے نہیں ا?سکی ہے تاہم بتایا جا رہا ہے کہ والدہ بیٹے کی دوسری ذات کی لڑکی سے شادی پر ناخوش تھی، بیٹے نے خاندان کی مرضی کے خلاف جاکر انکیتا نامی لڑکی سے پسند کی شادی کی تھی۔
کورٹ میرج کے 3 ماہ بعد لڑکی کے والد نے فیصلہ کیا کہ بیٹی اور داماد کی شادی کی تمام رسمیں مقامی ہال میں ادا کی جائیں گی اور جب اس شادی کی خبر لڑکے کی ماں کو ہوئی تو انھوں نے ہال پہنچ کر اپنے بیٹے کو چپل سے مارنا شروع کر دیا۔بھارت میں شادی کے وقت ذات پات کا خاص خیال رکھا جاتا ہے، یہ رسم ہندو و?ں میں کافی عام ہے۔ ہمسایہ ملک میں ذات پات کی وجہ سے اکثر اوقات جھگڑے کے واقعات پیش ا?تے رہتے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں