16

خاتون سے چھیڑ چھاڑ، ملزم کو گاو¿ں کی خواتین کے6 ماہ تک کپڑے دھونے کی انوکھی سزا سنا دی گئی

نئی دہلی (حالات انٹرنیشمل ڈیسک) اوباش نوجوان کو گاوں کی خواتین کے ساتھ چھیڑ خانی کرنا مہنگا پڑ گیا، عدالت نے ملزم کو گاوں کی تمام خواتین کے کپڑے 6 ماہ تک دھونے اور استری کرنے کی انوکھی سزا سنا دی- بھارتی ویب سائٹ کی رپورٹ کےمطابق جھانجھر پور ایڈیشنل سیشن اویناش کمار نے 16 ستمبر کو للن کمار صافی نامی ایک دھوبی کی درخواست کے جواب میں یہ حکم منظور کیا، جسے 18 اپریل کو اس کیس میں گرفتار کیا گیا تھا۔جج نے اپنے حکم میں کہا کہ درخواست گزار گاو¿ں کی تمام خواتین کے کپڑے دھوئے گا اور استری کرے گا۔ حکم میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ ملزم مخبر سمیت متاثرہ کے چھ ماہ تک مفت کپڑے دھوئے اور چھ ماہ مکمل ہونے کے بعد گاو¿ں کے مکھیہ/سرپنچ یا گاو¿ں کے کسی معزز سرکاری ملازم سے سرٹیفکیٹ حاصل کرے گا اور اسے متعلقہ عدالت میں پیش کریگا۔عدالت نے ملزم کو 10ہزار روپے کے ضمانتی مچلکے اور اسی رقم کی دو ضمانتیں بھی جمع کرانے کی ہدایت کی۔دی ٹیلیگراف کے مطابق مجرمانہ کارروائی ختم کرنے کے لئے ایک مفاہمت کی درخواست دائر کی گئی۔عدالت کے جج اویناش کمار نے ماضی میں بھی کئی مواقع پر ضمانت کے لئے ایسی غیر معمولی شرائط عائد کی ہیں۔ اس قبل جج نے9 جولائی کو قتل کی کوشش کے الزامات کا سامنا کرنیوالے ایک شخص کو اس شرط پر ضمانت دے دی تھی کہ اسے اپنے علاقے میں یا عوامی جگہ پر ”پانچ پھل والے درخت“ لگائے گا۔
برطانوی اخبر دی ٹیلی گراف کی رپورٹ کے مطابق ملزم نے 17 اپریل کی شب مدھوبنی ضلع کے لوکاہا بازار میں ایک خاتون کے ساتھ مبینہ طور پر بدسلوکی کی تھی۔ پولیس نے بتایا کہ ملزم پر کیس ایک خاتون کو بدنام کرنے کی نیت سے حملہ کرنے سے متعلق ہے۔ انھوں نے کہا کہ اس کیس میں چارج شیٹ مئی میں عدالت میں پیش کی گئی تھی اور اب فیصلہ آ گیا ہے۔ پولیس بھی ملزم پر پر نظر رکھے گی تاکہ اس بات کو یقینی بنایا جا سکے کہ وہ عدالت کے حکم پر عمل کرے۔ عدالت نے یہ حکم تب جاری کیا کہ جب شکایت کنندہ کے وکیل نے کہا کہ وہ اس کیس کو مزید آگے نہیں بڑھانا چاہتی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں