35

پنجاب میں آکسیجن کی تیاری اور فروخت کے حوالے سے ایمرجنسی نافذ، ذرائع

پنجاب میں آکسیجن کی تیاری اور فروخت کے حوالے سے ایمرجنسی نافذ، ذرائع

پنجاب میں آکسیجن کی تیاری اور فروخت کے حوالے سے ایمرجنسی نافذ کردی گئی ہے۔

آکسیجن تیار کرنیوالے ادارے تاحکم ثانی100فیصد آکسیجن صحت کے شعبے کو فروخت کریں،صحت کےشعبے  کوپہلے ہی25 سے30 فیصد زیادہ آکسیجن سپلائی کی جا رہی تھی۔

 اسٹیل، گلاس اور بحری جہاز توڑنے والی انڈسٹری کو آکسیجن سپلائی بند کرنیکا حکم بھی دے دیا گیا ہے، صرف فارماسوٹیکل انڈسٹری کو آکسیجن کی سپلائی ملتی رہےگی۔

ذرائع پنجاب حکومت کا کہنا ہے کہ اسپتالوں کومعمول کےآپریشن اور الیکٹریکل سرجری کرنےسے روک دیا گیا، پاکستان میں آکسیجن تیار کرنے والے اداروں کی کل تعداد 6 ہے، ان اداروں میں روزانہ 740 ٹن آکسیجن تیار ہوتی ہے۔

 ذرائع کا کہنا ہے کہ پنجاب میں آکسیجن تیار کرنے والے اداروں کی تعداد4ہے، پنجاب میں روزانہ 525 ٹن آکسیجن تیار ہوتی ہے، پنجاب میں نجی کمرشل سیکٹر کو تاحکم ثانی آکسیجن کی سپلائی نہیں ملے گی۔

آکسیجن مینوفیکچررز کا کہنا ہے کہ حکومت بلاتعطل بجلی دےتاکہ آکسیجن کی پیداوار نہ رک سکے، آکسیجن تیار کرنے والی صنعت کو سیلز ٹیکس وغیرہ میں رعایت دی جائے۔

آکسیجن مینوفیکچررز کے مطابق 50سے70روپےفی کیوبک میٹر آکسیجن فروخت کی جارہی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں