تمام کوششیں بے سود ثابت مہنگائی کم کرنے کے دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے

کراچی( آن لائن) حکومت کی جانب سے مہنگائی پر قابو پانے کی تمام کوششیں بے سود ثابت ہوئیں، ایک ہفتے میں مہنگائی کی شرح 0.60 فیصد بڑھ گئی۔ وفاقی ادارہ شماریات نے ہفتہ وار مہنگائی کے جاری کردہ اعداد و شمار میں بتایا کہ گزشتہ ایک ہفتے کے دوران 18 اشیائےضروریہ کی قیمتوں میں اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔رپورٹ کے مطابق زندہ مرغی، آلو، ٹماٹر، دودھ، گھی، مٹن، خوردنی تیل اور دہی سمیت دیگر اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں اضافہ ہوا ہے۔اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ ایک ہفتے کے دوران 13 اشیا کی قیمتوں میں کمی ہوئی ہے جب

کہ 20 اشیا کی قیمتوں میں استحکام پایا گیا ہے۔وفاقی ادارہ شماریات کے مطابق زندہ مرغی کی فی کلو قیمت میں 27 روپے سے زائد کا اضافہ ہوا ہے جب کہ آلو کی فی کلو قیمت میں بھی 3 روپے 87 پیسے کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے جس کے بعد فی کلو قیمت 43 روپے تک پہنچ گئی ہے۔اعداد و شمار کے مطابق ٹماٹر کی فی کلو قیمت بھی 3 روپے 33 پیسے بڑھ گئی ہے جس کے بعد فی کلو قیمت 48 روپے ریکارڈ کی گئی ہے۔وفاقی ادارہ شماریات کے مطابق گزشتہ ایک ہفتے کے دوران دودھ، گھی، مٹن، خوردنی تیل اور دہی کی قیمتوں میں بھی اضافہ ہوا ہے۔اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ ایک ہفتے کے دوران چینی کی فی کلو قیمت میں 2 روپے 90 پیسے کمی ہوئی ہے۔وفاقی ادارہ شماریات کی جاری کردہ رپورٹ کے تحت گزشتہ ایک ہفتے کے دوران لہسن، انڈے، دال ماش اور ایل پی جی کی قیمتوں میں بھی کمی ہوئی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں