52

پیپلز پارٹی کی ن لیگ کو سخت دھمکی،بات شہباز شریف تک جا پہنچی

اسلام آباد (جنرل رپورٹر) پاکستان مسلم لیگ ن اور جے یو آئی کی جانب سے یوسف رضا گیلانی کو سینیٹ میں اپوزیشن لیڈر نا مانے کے بیان پر پیپلزپارٹی کا ردعمل سامنے آگیا ہے ہے۔پیپلز پارٹی کے رکن قومی اسمبلی اور سابق وزیر خزانہ سید نوید قمر کا کہنا ہے کہ اگر ن لیگ اور جے یو آئی سینیٹ میں اپوزیشن لیڈر کو نہ ماننے کا فیصلہ کریں گی تو ہم بھی قومی اسمبلی کے اپوزیشن لیڈر کو نہ ماننے پر مجبور ہوں گے۔
اپوزیشن کے تمام اہم فیصلے پی ڈی ایم کے پلیٹ فارم سے مکمل اتفاق رائے سے ہونے چاہیے۔ ن لیگ اور جے یوآئی(ف) لانگ مارچ سے استعفوں کو نتھی کرکے پہلے ہی پی ڈی ایم کو دھچکا پہنچا چکے ہیں۔ اپوزیشن کے تمام اہم فیصلے پی ڈی ایم کے پلیٹ فارم سے مکمل اتفاق رائے سے ہونے چاہئیں۔
پیپلزپارٹی پی ڈی ایم کے پلیٹ فارم سے متفقہ فیصلوں کی خواہاں ہے۔ انہوں نے خبردار کیا کہ اگر سینیٹ میں یوسف رضا گیلانی کو اپوزیشن لیڈر نہ مانا گیا، تو پیپلزپارٹی بھی قومی اسمبلی کے اپوزیشن لیڈر کو تسلیم نہیں کریں گے۔
واضح رہے مسلم لیگ (ن) اور جے یو آئی نے سینیٹ میں یوسف رضا گیلانی کو قائد حزب اختلاف نہ ماننے پر اتفاق کیا ہے۔ مسلم لیگ (ن) کے رہنما شاہد خاقان عباسی نے جے یو آئی (ف) کے مولانا عبدالغفور حیدری سے ملاقات کی ، جس کے دوران شاہد خاقان عباسی نے مولانا فضل الرحمان کی خیریت دریافت کی اور سینیٹ میں قائد حزب اختلاف منتخب ہونے کے بعد کی صورت حال پر مشاورت کی۔
دونوں رہنماؤں کے درمیان ہونے والی گفتگو کے دوران کہا گیا کہ پی ڈی ایم میں شامل تمام جماعتیں پیپلزپارٹی کے رویہ سے مایوس ہیں۔ دونوں سیاسی جماعتوں کے رہنماؤں نے اس بات پر بھی اتفاق کیا کہ پی ڈی ایم میں شامل جماعتوں کو اپنا قائد حزب اختلاف لانے کے لئے حکمت عملی طے کرنی ہوگی۔اس موقع پر مولانا عبدالغفور حیدری نے کہا کہ قائد حزب اختلاف کے معاملے میں پیپلزپارٹی نے باپ سے حمایت مانگ کر سب کو مایوس کیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں