44

چینی کے بعد آٹا بحران نے سر اٹھانا شروع کردیا

لاہور، کراچی (آن لائن، این این آئی ) صوبائی دارالحکومت لاہور میں چینی بحران کے بعد آٹے کے بحران نے بھی سر اٹھانا شروع کردیا ہے۔ جس کے نتیجے میں شہر کے مختلف علاقوں میں 10 کلو اور 20 کلو آٹے کا تھیلا نایاب ہو کر رہ گیا ہے۔ اس سلسلے میں فلور ملز مالکان کے ذرائع کا کہنا ہے کہ گزشتہ 3روز سے شہر کی فلور ملوں سے آٹے کیعدم سپلائی کے باعث آٹا دکانوں سے نایاب ہوگیا ہے۔ تاہم آٹے کی قلت آئندہ چند روز میں ختم ہو جائے گی۔دوسری جانب لاہور سمیت پنجاب بھر میں شوگر ڈیلرز

کی ہڑتال دسویں روز میں داخل ہوگئی ہے۔ جس کے باعث شہر کے عام بازاروں میں چینی کا بحران مزید شدت اختیار کرگیا ہے۔ چینی مافیا نے سٹاک میں دستیاب چینی 105 روپے کلو کے حساب سے بلیک میں فروخت کرنا شروع کردی ہے جبکہ دوسری طرف لاہور کی ضلعی انتظامیہ نے شہر کے عام بازاروں میں چینی سپلائی کرنے کا دعویٰ کیا ہے جبکہ شہریوں اور دکانداروں کا کہنا ہے کہ ضلعی انتظامیہ کا دعویٰ محض ان کے سرکاری کاغذوں تک محدود ہیں۔ علاوہ ازیں بابرکت ماہ رمضان المبارک کی آمد سے قبل ہی مشروبات، خشک دودھ، شیمپو اور دیگر اشیا مہنگی کردی گئی ہیں۔یوٹیلیٹی اسٹورز پر رمضان پیکیج سے قبل شیمپو 10 سے 20 روپے، مشروبات 5 سے 10روپے، مختلف برانڈز کے ٹی وائٹنرز 21 سے 31روپے، خشک دودھ 50سے 100روپئے، ٹوتھ پیسٹ 15روپے، جوتوں کی پالش 10 اور سویاں 8 روپے تک مہنگی کردی گئی ہیں۔ پریشان حال صارفین کا کہنا ہے کہ جب بھی آئیں کچھ نہ کچھ مہنگا ہو جاتا ہے ، حکومت رمضان پیکیج کا فوری نفاذ کرے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں