55

کراچی میں غیرت کے نام پر نوجوان اور خاتون کو ذبح کر دیا گیا

کراچی (بیورو رپورٹ) منھگو پیر کے علاقے خیرآباد میں گھر سے خاتون اور مرد کی گلا کٹی لاشیں ملی ہیں۔تفصیلات کے مطابق کراچی پولیس منگھو پیر کے علاقے خیرآباد امن چوک کے قریب گلی نمبر 3 میں واقع ایک گھر میں خاتون اور مرد کو گلا کاٹ کر قتل کر دیا گیا۔متعلقہ تھانے کی پولیس جائے وقوعہ پر پہنچ گئی،لاشوں کو اسپتال منتقل کیا گیا۔
مقتول کی شناخت 30 سالہ مختار علی جب کہ مقتولہ کی شناخت 28 سالہ دربی بی کے نام سے ہوئی۔مقتول کے چھوٹے بھائیوں نے میڈیا سے گفتگو میں بتایا کہ ان کا تعلق لاڑکانہ سے ہے جب کہ وہ چار بھائی ہیں۔مقتول مختار دوسرے نمبر ہے اور غیر شادی شدی ہے۔وہ پکوان پر کھانا بنانے کا کام کرتا تھا۔جب کہ مقتولہ در بی بی ان کی خالہ ذاد تھی،مقتولہ کا شوہر عبدالرو ¿ف روزگار کے سلسلے میں سعودی عرب میں مقیم ہے۔
پولیس کا کہنا ہے کہ واقعہ غیرت کے نام پر قتل کا ہے۔خاتون اور مرد کو گھر کے کمرے میں بیہمانہ طریقے سے ذبح کر دیا گیا،مختار نے کافی ہمت کا مظاہرہ کیا اور گلا کٹی حالت میں 500 میٹر سے زائد فاصلے پر واقعے اپنے گھر تک پہنچ کر اپنی والدہ کو اطلاع دی۔اس بات کی تصدیق ہو گئی ہے کہ مقتولین کو مقتولہ کے بھائی نے قتل کیا تاہم ابھی اس بات کی تصدیق نہیں ہوئی کہ کس بھائی نے قتل کیا ہے کیونکہ مقتولہ کے تین بھائی ہیں اور واقعے کے بعد سے تینوں بھائی فرار ہیں۔
پولیس نے ملزمان کے گھر والوں کو تفتیش کے لیے حراست میں لے لیا ہے۔پولیس کے مطابق خاتون در بی بی اور رشتے دار مختار کے قتل میں ملوث چاروں ملزمان کی بیویاں پولیس کی حراست میں جنہوں نے پولیس کو بتایا کہ رات گئے مختار اپنی رشتے دار خاتون در بی بی کے گھر اس سے ملنے آیا جس کے بارے میں در بی بی کے بھائیوں کو پتہ لگا تووہ پہنچ گئے۔نوجوان نے ملزمان کے ساتھ ہاتھا پائی کر کے بھاگنے کی کوشش کی لیکن اسے تیز دھار آلے کے وار سے قتل کر دیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں