42

امریکا:فائرنگ میں چھ ایشیائی نڑاد خواتین سمیت آٹھ افراد ہلاک

اسلام آباد (جنرل رپورٹر) اٹلانٹا اور اس سے تقریباً چالیس کلومیٹر دور شیروکی کاو ¿نٹی میں منگل کے روز ایک حملہ آور نے مساج پارلروں پر فائرنگ کر کے کم ازکم آٹھ لوگوں کو ہلاک کر دیا۔ مرنے والوں میں میں چھ ایشیائی خواتین شامل ہیں۔ پولیس نے مشتبہ حملہ آور کو گرفتار کرنے کا دعوی کیا ہے۔
پولیس چیف راڈنی برائنٹ نے بتایا کہ اٹلانٹا میں فائرنگ کا یہ واقعہ سڑک کے دونوں طرف واقع دو مساج پارلروں میں پیش آیا۔
وہاں چار افراد ہلاک ہو گئے جب کہ ایک شخص زخمی ہوا ہے۔
انہوں نے بتایا کہ پولیس کو شام چھ بجے فون پر ایک جگہ ‘ڈاکہ زنی‘ کی اطلاع ملی۔ جب پولیس موقع پر پہنچی تو وہاں تین عورتوں کو مردہ پایا۔
پولیس چیف نے بتایا کہ پولیس اس واقعہ کی ابتدائی تفتیش کر ہی رہی تھی کہ اسے سڑک کے دوسری طرف واقع ایک سپا سے فون کال موصول ہوئی، جہاں گولی لگنے سے ایک عورت کی موت ہوگئی تھی اور ایک دیگر زخمی ہو گئی تھی۔فائرنگ کا دوسرا واقعہ
قبل ازیں تقریباً پانچ بجے شام کو ایکورتھ میں بھی ایک مساج پارلر میں فائرنگ میں پانچ افراد کو گولی مار دی گئی۔ ان میں سے دو کی موقع پر ہی موت ہوگئی جب کہ تین دیگر زخمیوں کو ہسپتال لے جایا گیا لیکن ان میں سے دو ہسپتال میں چل بسے۔
شیروکی قصبے کے شیرف کے ترجمان کیپٹن جے بیکر نے کہا کہ ابھی یہ واضح نہیں ہے کہ اٹلانٹا اور شیروکی دونوں مقامات پر مساج پارلروں پر ہونے والے حملوں میں کوئی تعلق ہے یا نہیں۔
ایک شخص گرفتار
ان ہلاکت خیز حملوں سلسلے میں پولیس نے منگل کے روز ایک اکیس سالہ شخص کو گرفتار کیا ہے۔ اسے ان واقعات کے چند گھنٹے بعد جنوب مغرب جارجیا سے گرفتار کیا گیا۔
شیروکی کاو ¿نٹی کے حکام نے اس گرفتاری کی تصدیق کی ہے۔
حکام کا کہنا ہے کہ ابھی یہ واضح نہیں ہے کہ آیا متاثرین کوان کی نسل کی وجہ سے نشانہ بنایا گیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں