77

وزیراعظم کے بھانجے حسان نیازی کا ریسٹورانٹ میں جھگڑا، متعدد افراد زخمی

لاہور (بیورو رپورٹ) وزیراعظم عمران خان کے بھانجے حسان نیازی کے ریسٹورنٹ میں پیسوں کے لین دین پر جھگڑا ہو گیا جس کے نتیجے میں متعدد افراد زخمی بھی ہوئے ہیں۔اس حوالے سے سٹی 42 کی رپورٹ میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ غالب مارکیٹ کے علاقے میں وزیراعظم عمران خان کے بھانجے حسان نیازی کے رسیٹورانٹ میں کچھ نوجواںوں کی پارٹی جاری تھی،اس دوران حسان نیازی اور ان کے عملے کے ساتھ پیسوں کے لین دین پر تنازع ہوا جس سے جھگڑا بڑھ گیا۔
جھگڑے کے باعث ریسٹورانٹ میدان جنگ بن گیا۔جھگڑے کے دوران کئی افراد زخمی ہوگئے،پولیس بھی اطلاع ملنے پر پہنچ گئی اور دونوں فریقین کو تھانے لے گئی۔میڈیا رپورٹس کے مطابق پولیس نے صلح صفائی کے بعد معاملہ رفع دفع کروایا، اس سے قبل گذشتہ سال حسان نیازی کی ایک جھگڑے کی ویڈیو وائرل ہوئی تھی جس میں وہ اپنی گاڑی کو دوسری گاڑی کی ٹکر لگنے پر آپے سے باہر ہوگئے تھے۔
حسان نیازی نے گاڑی کو ٹکر لگنے پر دوسری گاڑی کی چابی نکال لی، اور اس گاڑی کو لاتیں ماریں۔ دونوں گاڑیاں نجی کلب میں داخل ہورہی تھیں کہ حسان نیازی کی گاڑی سے دوسری گاڑی کی ہلکی سی ٹکر ہوگئی، جس پر حسان نیازی غصے میں آگئے، جس گاڑی نے حسان نیازی کی گاڑی کو ٹکر ماری تھی، انہوں نے اس گاڑی کی چابی نکال کرگالیاں دینا شروع کردیں۔ بتایا گیا کہ حسان نیازی نے ٹکر مارنے والی گاڑی کو دوبارہ بدلہ لینے کیلئے واپس اپنی گاڑی سے ٹھوکر بھی ماری۔
10 جنوری 2020ئ کو وزیراعظم عمران خان کے بھانجے بیرسٹر حسان نیازی نے کہا کہ کار کے ڈرائیور سےمعاملہ رفع دفع ہوگیا ہے، گاڑی کو ٹکر مارنے والے کار ڈرائیور کے ساتھ معمولی جھگڑا ہوا، اب معاملہ حل ہوگیا ہے۔آج پھر حسان نیازی کے ریسٹورانٹ میں جھگڑے کا معاملہ سامنے آیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں