37

امریکی پابندیاں مسترد، پاکستان ترکی سے جدید جنگی ہیلی کاپٹر خریدے گا ..

لاہور (بیورو رپورٹ) امریکی پابندیاں مسترد، پاکستان کا ترکی سے جدید جنگی ہیلی کاپٹر خریدنے کا فیصلہ۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان اور ترکی کے درمیان 3 برس قبل طے پائے معاہدے کے تحت پاکستانی کی جنگی و دفاعی صلاحیت میں زبردست اضافے کا امکان ہے۔ ذرائع کے مطابق پاکستان نے ترکی پر امریکی پابندیوں کے باوجود 30 جدید ٹی 129 جنگی ہیلی کاپٹرز کی خریداری کا فیصلہ کیا ہے۔
پاکستان کی جانب سے 2018 میں ترک کمپنی کیساتھ ڈیڑھ ارب ڈالرز کا دفاعی معاہدہ کیا گیا تھا۔ اس معاہدے کے تحت ترک ایروسپیس انڈسٹریز کی جانب سے پاکستان کو 30 جدید ٹی 129 جنگی ہیلی کاپٹرز فراہم کیے جانے تھے۔ تاہم بعد ازاں ترکی کی جانب سے روسی میزائل ڈیفنس سسٹم ایس یو 400 کی خریداری کا فیصلہ کیا گیا، جسے پر امریکا نے شدید ناراضگی کا اظہار کیا۔
ترکی اور روس کے دفاعی معاہدے سے ناخوش امریکا نے اپنے نیٹو اتحادی ترکی پر دفاعی پابندیاں عائد کر دی تھیں۔ ان پابندیوں کی وجہ سے ہی پاکستان کو 30 جدید ٹی 129 جنگی ہیلی کاپٹرز کی فراہمی تاخیر کا شکار ہوئی۔ امریکی پابندیوں کی وجہ سے ترکی امریکا کے ایکسپورٹ لائسنس کے بنا پاکستان کو 30 جدید ٹی 129 جنگی ہیلی کاپٹرز کی فراہمی سے قاصر رہا۔ تاہم اب بتایا گیا ہے کہ ترکی اور امریکا کے تعلقات میں بہتری کے آثار نظر آنے کے بعد امکان ہے کہ ترک ایروسپیس انڈسٹریز جلد پاکستان کو 30 جدید ٹی 129 جنگی ہیلی کاپٹرز فراہم کر دے گی۔
پاکستان نے بھی امریکی پابندیوں کے باوجود ترکی کو ہیلی کاپٹر کی فراہمی کیلئے دی گئی ڈیڈ لائن میں ایک سال کا اضافہ کیا ہے۔ واضح رہے کہ جنگی جنون میں مبتلا بھارت کی جانب سے خطے میں شروع کی گئی ہتھیاروں کی نئی دوڑ کا مقابلہ کرنے کیلئے پاکستان کی جانب سے بھی ہر ممکن اقدام اٹھایا جا رہا ہے۔ وطن عزیز کے دفاع کے مزید مضبوط بنانے کیلئے پاکستان کی جانب سے اپنے دوست و اتحادی ممالک چین اور ترکی کیساتھ بھی اہم دفاعی معاہدے کیے گئے ہیں۔ پاکستان کی جانب سے جدید جنگی بحری جہاز، آبدوزیں، جنگی ڈرونز سمیت دیگر دفاعی آلات بھی حاصل کیے جا رہے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں