60

دادو، دو ملزمان نے گلی میں گیارہ سالہ بچی کو زیادتی کا نشانہ بنا دیا

دادو (بیورو ڈسک) دو ملزمان نے سندھ کے شہر دادو میں 11 سالہ بچی کو زیادتی کا نشانہ بنا دیا۔تفصیلات کے مطابق خیرپور نتھن شاہ ٹاو ¿ن سے 7 کلومیٹر دو کھتری گاو ¿ں میں دو ملزمان نے ایک 11 سالہ بچی کو زیادتی کا نشانہ بنا دیا۔بچی کو فوری طور پر علاج کے لیے این شاہ تعلقہ اسپتال میں داخل کر دیا گیا ہے۔کسان گھرانے سے تعلق رکھنے والی بچی کے ساتھ اس وقت زیادتی کی گئی جب وہ گلی میں کھیلنے کے لیے گھر سے باہر آئی تھی۔
علاقے کے کچھ رہایشیوں کا کہنا ہے دو ملزمان کی جانب سے گلی میں بچی کا ریپ کیا گیا اور کسی میں انہیں روکنے کی ہمت نہ ہوئی کیونکہ ملزمان بااثر خاندان سے تعلق رکھتے تھے۔بتایا گیا ہے کہ بچی کے والدین نے این شاہ تھانے میں دو ملزمان کے خلاف ایف آئی آر درج کروا دی ہے جب کہ ایس ایس پی دادو اعجاز شیخ کا کہنا ہے کہ ملزمان کی گرفتاری کے لیے چھاپے مارے جا رہےہیں۔
واضح رہے کہ گذشتہ ہفتے دادو میں ہی 3 سالہ بچی کے ساتھ ریپ کرنے کے الزام پر پولیس نے ملزم کو گرفتار کیا گیا تھا۔متاثرہ بچی کے ماموں کے مطابق ملزم ہمارا پڑوسی ہے۔ بچی باہر کھیلنے کے لیے نکلی ہے تو یہ بچی کو اپنے ساتھ گھر لے گیا۔ پولیس آئی تو وہ گھر سے باہر نہیں نکل رہا تھا پھر ایس ایچ او نے گرفتار کیا۔ خاتون تھانیدار نے قانونی کارروائی سے پہلے فوری طبی امداد کے لیے متاثرہ بچی کو خود گود میں لے کر اسپتال پہنچایا جہاں ڈاکٹر کو ڈیوٹی سے غائب دیکھ کر برہمی کا اظہار بھی کیا۔
تھانیدار بے نظیر جمالی نے بتایا کہ متاثرہ فیملی کی نشاندہی پر پولیس نے ملزم کو گرفتار کیا۔ اسکے بعد بچی کو اسپتال لے کر آئے جہاں وہ زیر علاج ہے۔بچی کو مزید علاج کے لیے حیدرآباد منتقل کر دیا گیا ہے۔واقعے کے خلاف مشتعل شہریوں نے احتجاج کیا اور ٹائر جلا کر یلوے پھاٹک کو بند کیا۔ مظاہرین نے ملزم کو سرعام پھانسی دینے کا مطالبہ بھی کیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں