34

ضمنی الیکشن میں بے ضابطگیاں دیکھنے میں آئیں، فافن رپورٹ

این اے 75: ضمنی الیکشن میں بے ضابطگیاں دیکھنے میں آئیں، فافن رپورٹ

فری اینڈ فیئر الیکشن نیٹ ورک (فافن) نے 16 تا 22 فروری کو ہونے والے ضمنی انتخابات کے حوالے سے رپورٹ جاری کردی ہے۔

فافن کی رپورٹ قومی اسمبلی کی 3 اور صوبائی اسمبلی 5 نشستوں پر ضمنی انتخابات سے متعلق ہے۔

فافن نے اپنی رپورٹ میں بتایا کہ ضمنی انتخابات کے دوران مجموعی طور پر انتخابی نظام میں واضح بہتری نظر آئی جبکہ کورونا ایس او پیز کی خلاف ورزی، غیر قانونی الیکشن مہم عمومی خلاف ورزیاں سامنے آئیں۔

فافن رپورٹ کے مطابق این اے 75 ضمنی الیکشن میں ووٹوں کی گنتی کے دوران بےضابطگیاں دیکھنے میں آئیں، جس کے باعث الیکشن کمیشن کو اس نشست پر نتیجہ روکنا پڑا۔

رپورٹ کے مطابق ضمنی انتخابات میں ووٹوں کی پولنگ اور گنتی کے عمل میں بہتری آئی، این اے 75 میں پولنگ اسٹیشنز کے باہر الیکشن کمیشن کو انتظامی امور میں بہتری کی ضرورت ہے۔

فافن رپورٹ کے مطابق انتخابات کے دوران تشدد کے واقعات روکنے کے لیے الیکشن کمیشن کو سخت اقدامات کرنے کی ضرورت ہے۔

شفاف انتخابات کی راہ میں حائل سرکاری افسران کو جرمانے اور سخت سزائیں دی جائیں، تاخیر سے نتائج موصول ہونے والے حلقوں میں الیکشن کمیشن دوبارہ انتخابات کراسکتا ہے۔

این اے 75 کے واقعات کے باوجود حالیہ ضمنی انتخابات 2018ء کے عام انتخابات سے بہتر تھے، 71 فیصد پولنگ اسٹیشنز کے قریب پارٹی کیمپس کی اجازت کوڈ آف کنڈکٹ کی خلاف ورزی ہے۔

فافن رپورٹ کے مطابق انتخابات کے دوران ایک کمرے میں متعدد پولنگ بوتھ قائم کیے گئے جس سے غیر ضروری رش ہوا، آٹھ حلقوں میں ووٹوں کی گنتی کے عمل کے دوران خلاف ورزی دیکھنے میں نہیں آئی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں