راولپنڈی ، پولیس نے زیادتی کے جھوٹے مقدمات درج کرواکر شہریوں کو بلیک کر نے والا گینگ گرفتار کرلیا

راولپنڈی پولیس خواتین سے زیادتی کے معاملہ پر زیروٹالیرنس پالیسی رکھتی ہے ،شہریوں کے استحصال کی ہرگز اجازت نہیں دی جا سکتی،سی پی او محمد احسن یونس

راولپنڈی(کرائم رپورٹر) راولپنڈی پولیس نے اہم کارروائی کرتے ہوئے زیادتی کے مقدمات درج کروا کے شہریوں کو بلیک میل کرنے اور بھتہ لینے والا گینگ گرفتارکرلیا، گینگ نے 05 روز قبل نیوٹاون کے علاقہ میٹرو سٹیشن انڈر پاس میں زیادتی کا واقعہ رپورٹ کیا جس پر فوری طور پر مقدمہ درج کر کے ملزم کو گرفتار کیا گیا تھا، سی پی او کی ہدایات پر اے ایس پی نیوٹاؤن بینش فاطمہ کی زیرنگرانی مقدمہ کی تفتیش کی گئی، سی پی او نے کہا کہ راولپنڈی پولیس خواتین سے زیادتی کے معاملہ پر زیروٹالیرنس پالیسی رکھتی ہے تاہم شہریوں کے استحصال کی ہرگز اجازت نہیں دی جا سکتی۔

تفصیلات کے مطابق راولپنڈی پولیس نے کاروائی کرتے ہوئے زیادتی کے مقدمات درج کروا کے شہریوں کو بلیک میل کرنے اور بھتہ لینے والے گینگ کے 03ارکان کو گرفتار کرلیا، گینگ نے 05 روز قبل نیوٹاون کے علاقہ میٹرو سٹیشن انڈر پاس میں زیادتی کا واقعہ رپورٹ کیا جس پر فوری طور پر مقدمہ درج کر کے ملزم کو گرفتار کیا گیا تھا، سی پی او محمد احسن یونس نے اے ایس پی نیوٹاؤن بینش فاطمہ کو مقدمہ کی میرٹ پر تفتیش کو یقینی بنانے کی ہدایات دی تھیں، اے ایس پی نیوٹاؤن بینش فاطمہ کی زیر نگرانی ایس ایچ او نیوٹاؤن، لیڈی سب انسپکٹر ماریہ اور ٹیم نے تفتیش کے دوران حقائق سامنے آنے پر گینگ کے 03 ارکان ماہم عرف کائنات، احمد رضا اور غلام حسین کو گرفتار کر لیا گیا، ملزمان نے انکشاف کیا کہ مختلف اضلاع میں نام اور پتہ تبدیل کر کے زیادتی کے مقدمات درج کرواتے اور صلح کی مد میں رقم وصول کرتے تھے، 05 روز قبل تھانہ نیوٹاؤن میں درج مقدمہ میں بھی ملزمان نے صلح کے لئے 7 لاکھ روپے طلب کئے تھے، اے ایس پی نیوٹاؤن بینش فاطمہ کے مطابق ملزمان کو ٹھوس شواہد کے ساتھ چالان کر کے قرار واقعی سزا دلوائی جائے گی، اس موقعہ پر سی پی او محمد احسن یونس کا کہنا تھا کہ راولپنڈی پولیس خواتین سے زیادتی کے معاملہ پر زیروٹالیرنس پالیسی رکھتی ہے تاہم شہریوں کے استحصال کی ہرگز اجازت نہیں دی جا سکتی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں