محفل میلاد کے انعقاد کے لیے این سی او سی نے خصوصی ہدایات جاری کر دیں

این سی او سی نے علماء اور نعت خوانوں کی مکمل ویکسینیشن لازمی قرار دے دی

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) : محفل میلاد کے انعقاد کے لیے این سی او سی نے خصوصی ہدایات جاری کر دیں۔ تفصیلات کے مطابق نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر(این سی او سی) نے ماہ ربیع الاول میں محفل میلاد اور سیرت کانفرنسوں کے انعقاد کے لیے خصوصی ہدایات جاری کی ہیں۔ محفل میلاد کے دوران ماسک کا استعمال، سماجی فاصلہ اور سینیٹائزر کی دستیابی کو یقینی بنایا جائے۔
این سی او سی کی جانب سے علماء اور نعت خوانوں کی مکمل ویکسینیشن لازمی قرار دے دی گئی ہے۔ اس کے علاوہ سرکاری اور نجی میڈیا ہاؤسز کو براہ راست نشریات کی تجویز دی گئی تاکہ زیادہ سے زیادہ لوگ گھروں میں رہ کر محافل میں شرکت کرپائیں۔ این سی او سی کے مطابق دسویں ربیع الاول کو خصوصی ویکسینیشن کیمپوں کا قیام کر کے محفل میں شرکت کرنے والے افراد کی ویکسینیشن کو موقع پر یقینی بنایا جائے گا۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق این سی او سی کی جانب سے جاری ہدایات کے مطابق محفل میلاد اور سیرت کانفرنسوں کے انعقاد کا مقام کھلا اور کشادہ ہونا چاہئیے ۔ وینٹیلیشن کے بہتر انتظام کو بھی ملحوظ خاطر رکھا جائے۔ 6 فٹ سماجی فا صلے کو برقرار رکھنا لازمی ہے۔ مسجد یا پنڈال انتظامیہ سماجی فاصلے کے نشانات کوواضح کریں۔ مزید برآں داخلی راستوں پر تمام افراد کی تھرمل اسکریننگ کو یقینی بنایا جائے۔
ماسک کی دستیابی اورداخلی دروازوں پر سینیٹائزر اور ہاتھ دھونے کا انتظام ہونا ضروری ہے۔ ہیلتھ ڈیسک قائم کیے جائیں تاکہ کھانسی، فلو اور بخار کی علامات والے افراد کی پنڈال میں عدم شرکت کو یقینی بنا جا سکے۔ پنڈال میں ہجوم کی بھگ دھڑ سے بچنے کے لیے ، صرف پیکڈ فوڈ شرکاء میں تقسیم کیا جائے۔ این سی او سی کی جانب سے جاری کی جانے والی ہدایات میں مزید کہا گیا کہ صرف لائسنس یافتہ/روایتی جلوسوں کوکوویڈ ایس او پیزکی پابندی کے ساتھ اجازت دی جائے ۔
جلوسوں کی تعداد کو کم کرنے کی تجویزبھی دی گئی ہے۔ مقدس اشیاء کو چھونے، چومنے یا گلے لگانے سے گریز کریں۔ این سی او سی نے آرگنائزنگ کمیٹیز کوجلوسوں کے دوران حکومتی ہدایت پر عمل درآمد کو یقینی بنانے کے لیے رضاکاروں کی خدمات کو بروے کار لانے کے احکامات دیئے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں