جہیز واپس نہ کرنے پر سابق وفاقی وزیر کا بیٹا گرفتار

جج فیملی کورٹ نے وقار وصی کی گرفتاری کا حکم سناتے ہوئے عدالتی فیصلے پر عمل درآمد نہ کرنے پر ایک سال قید کی سزا سنا دی

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) : جہیز واپس نہ کرنے پر سابق وفاقی وزیر قانون وصی ظفر کے بیٹے کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔میڈیا رپورٹ کے مطابق سینیر سول جج فیملی کورٹ قدرت اللہ نے وقار وصی کی گرفتاری کا حکم سناتے ہوئے عدالتی فیصلے پر عمل درآمد نہ کرنے پر اس سے ایک سال قید کی سزا سنا دی۔

عدالت نے حکم دیا کہ وقار وصی کو عدالتی فیصلے پر عمل درآمد کرنے پر ایک سال سے قبل ہی رہا کر دیا جائے گا،عدالت نے 20 مارچ 2018 کو وقار وصی کو سابقہ بیوی کو زیوارات واپسی کا حکم دیا تھا لیکن وقار وصی نے عدالتی فیصلے کو طویل عرصہ گزرنے کے باوجود اپنی مطلقہ بیوی کو جہیز کا سامان واپس نہیں کیا۔

واضح رہے کہ وصی ظفر کا تعلق مسلم لیگ ق سے تھا اور پرویز مشرف کی کابینہ میں وفاقی وزیر قانون تھے۔وہ رواں سال 72 سال کی عمر میں انتقال کر گئے تھے۔ مرحوم کا تعلق فیصل آباد کے علاقے جڑانوالہ سے تھا۔انہوں نے ایک انٹرویو کے دوران نازیبا بیان کا استعمال کیا تھا جس کے بعد ویڈیو وائرل ہو گئی تھی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں