یورپی یونین کی یہودیوں کے طرز زندگی میں تنوع کے فروغ کی کوشش

یورپی یونین یہودی باشندوں کی اجتماعی زندگی کو اس کے تمام تر تنوع کے ساتھ فروغ دینا چاہتی ہے،صدرر ارزولا فان

برسلز (انٹرنیشنل ڈیسک) یورپی کمیشن نے اعلان کیا ہے کہ وہ یورپ میں بڑھتی ہوئی سامیت دشمنی کا بھرپور مقابلہ کرے گا۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق یورپی کمیشن کی صدر ارزولا فان ڈئر لاین نے کہا کہ یورپی یونین یہودی باشندوں کی اجتماعی زندگی کو اس کے تمام تر تنوع کے ساتھ فروغ دینا چاہتی ہے۔

یونین کے رکن تمام ستائیس ممالک اس بارے میں اپنی اپنی قومی حکمت عملی تیار کریں گے۔

یہ یورپی موقف جرمن شہر لائپزگ میں ایک یہودی موسیقار کے ساتھ پیش آنے والے اس واقعے کے بعد سامنے آیا ہے، جو جرمن میڈیا میں جلی سرخیوں کا موضوع بنا۔ لائپزگ کے ایک ہوٹل میں ایک یہودی موسیقار کو ہوٹل کے عملے کے ایک رکن نے ستارہ داد والا لاکٹ اتارنے کے لیے کہہ دیا تھا۔ اس واقعے کی اسے یہود دشمنی کا مظہر قرار دے کر مذمت کی گئی تھی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں