راولپنڈی کے علاوہ پنجاب کے تمام اضلاع میں لاک ڈاؤن نافذ، نئے احکامات جاری

انڈور شادیوں کی تقریبات صرف 200 ویکسی نیٹڈ افراد کی گنجائش کے ساتھ، آؤٹ ڈور شادیوں ‏میں صرف 400 ویکسی نیٹڈ افراد کی اجازت ہو گی تمام مزارات پر صرف 30 سال سے زائد عمر کے ویکسی نیٹڈ ‏افراد کو جانے کی اجازت ہو گی، پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ

لاہور (بیورو رپورٹ) راولپنڈی کے علاوہ پنجاب کے تمام اضلاع میں لاک ڈاؤن نافذ، نئے احکامات جاری- تفصیلات کے مطابق پنجاب میں کم ویکسی نیشن شرح کے حامل اضلاع میں لاک ڈاؤن لگا دیا گیا۔ لاک ڈاون کا اطلاق یکم اکتوبر سے 15 اکتوبر تک راولپنڈی کے علاوہ پنجاب کے تمام اضلاع میں ہو گا۔ مارکیٹ اور ‏کاروباری مراکز رات 10 بجے تک کھلے رہ سکیں گے۔
اتوار کے دن مکمل چھٹی ہو گی۔ پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کے سیکرٹری عمران سکندر بلوچ کے مطابق صرف ویکسی نیٹڈ افراد کے لیے 50فیصد ‏آکوپینسی کے ساتھ انڈور ڈائننگ کی رات 11:59 تک اجازت ہو گی۔ آؤٹ ڈائننگ کی بھی رات 11:59 تک صرف ‏ویکسی نیٹڈ افراد کے لیے اجازت ہو گی۔ انڈور شادیوں کی تقریبات صرف 200 ویکسی نیٹڈ افراد کی گنجائش کے ساتھ اجازت ہو گی۔

آؤٹ ڈور شادیوں ‏میں صرف 400 ویکسی نیٹڈ افراد کی اجازت ہو گی تمام مزارات پر صرف 30 سال سے زائد عمر کے ویکسی نیٹڈ ‏افراد کو جانے کی اجازت ہو گی۔ سینما گھر مکمل طور پر بند رہیں گے البتہ انڈور اجتماعات میں صرف200 ویکسی نیٹڈ افراد کی اجازت ہوگی۔ ‏آؤٹ ڈور اجتماعات میں 400 ویکسی نیٹڈ افراد کی شرکت کی اجازت ہو گی۔ کانٹیکٹ اسپورٹس پر مکمل پابندی رہے گی۔
جم صرف ویکسی نیٹڈ افراد کے لیے کھلیں گے۔ تمام نجی و سرکاری ‏دفاتر 100 فیصد عملہ کے ساتھ کام کرسکیں گے۔ پبلک ٹرانسپورٹ 70 فیصد ویکسی نیٹڈ مسافروں کے ساتھ ساتوں دن چل سکے گی۔ تفریحی مقامات 50 فیصد ‏کپیسٹی کے ساتھ کھل سکیں گے۔ ‏ کنٹرولڈ سیاحت کے لیے صرف ویکسی نیٹڈ افراد کو اجازت ہو گی۔ تمام تعلیمی ادارے ہفتے کے تین تین دن 50 ‏فیصد حاضری کے ساتھ کھل سکیں گے۔
مزید برآں محکمہ داخلہ سندھ نے بھی کورونا ایس اوپیز سے متعلق نیا نوٹیفکیشن جاری کردیا ہے، کراچی سمیت سندھ بھر میں انڈورشادیوں میں 200 جبکہ آوٹ ڈور شادیوں میں 400 افراد شرکت کرسکیں گے، صرف ویکسینیشن کرانے والی ہی شرکت کر سکیں گے۔ریسٹورانٹس میں رات 12 بجے تک ڈائننگ کی اجازت ہو گی، 50فیصد گنجائش کے ساتھ انڈور ڈائننگ کی جا سکے گی،ویکسی نیٹڈ افراد ہی ڈائننگ کرسکیں گے دکانیں،مارکٹیں،شاپنگ مالز رات 10 بجے تک کھلے رکھنے کی اجازت ہوگی،میڈیکل اسٹوراور کھانے پینے کی اشیا کی دکانیں 24گھنٹے کھلی رکھنے کی اجازت ہوگی۔
ریل گاڑیوں اور پبلک ٹرانسپورٹ میں 70 فیصد گنجائش کے ساتھ سفر کیا جاسکے گا،پبلک ٹرانسپورٹ میں کھانا دینے کی اجازت نہیں ہوگی۔پارکس اور سوئمنگ پول 50فیصد گنجائش کے ساتھ کھولے جاسکیں گے،مزارات ضلعی انتظامیہ اور اوقاف کی ہدایت کے بعد کھول دیئے جائیں گی۔دفاتر میں بھی 100 فیصد حاضری کی اجازت ہوگی،سینما گھروں پر پابندی برقرار رہے گی،جمز میں صرف ویکسی نیٹڈ افراد کو ہی جانے کی اجازت ہوگی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں