19

اسرائیلی مظالم بند، فلسطینیوں کو منصفانہ حقوق دیئے جائیں، رجب طیب ایردوآن

مشرق وسطیٰ میں دیر پا امن کے قیام کیلئے مسئلہ فلسطین کا فلسطینی قوم کی امنگوں کے مطابق حل ہونا ضروری ہے، ترک صدر

نیو یارک (حالات انٹرنیشنل ڈیسک) ترک صدر رجب طیب ایردوآن نے عالمی برادری سے مسئلہ فلسطین کا منصفانہ حل نکالنے اور فلسطینیوں پر اسرائیلی مظالم بند کرانے کا مطالبہ کیا ہے۔نیویارک میں جنرل اسمبلی کے 76 ویں اجلاس سے خطاب میں صدر ایردوآن نے کہا کہ اب وقت آگیا ہے کہ قابض اسرائیلی ریاست کی فلسطینی اراضی کو ضم کرنے اور یہودی آبادی کاری کی پالیسیوں کو روکا جائے۔
صدر ایردوآن نے کہا کہ جیسے جیسے اسرائیلی ریاست کا فلسطینیوں پرظلم بڑھتا جا رہا ہے۔ ایسے ایسے مشرق وسطیٰ میں عدم استحکام اور امن کی کوششوں کو نقصان پہنچ رہا ہے۔ مشرق وسطیٰ میں دیر پا امن کے قیام کیلئے مسئلہ فلسطین کا فلسطینی قوم کی امنگوں کے مطابق حل ہونا ضروری ہے۔

طیب ایردوآن نے کہا کہ ترکی القدس کے تقدس کے حوالے سے 1947ء کے اقوام متحدہ کے قانون پرعملدرآمد پر زور دیتا ہے اور فلسطینی قوم ، القدس مسجد اقصیٰ کے تقدس کی پامالی روکنے کا مطالبہ کرتا ہے۔

ترک صدر نے کہا کہ ان کا ملک 1967ء کی سرحدوں پرمشتمل آزاد فلسطینی ریاست کیقیام اور القدس کو اس کا دارالحکومت بنانے کے مطالبے پر قائم ہے۔ ترکی کے یہ اہداف اس کی اولین ترجیح میں شامل ہیں اور ترکی دو ریاستی حل کے تصور کی حمایت جاری رکھے گا۔طیب ایردوآن نے امن عمل کی بحالی اور دو ریاستی حل کے تصور کے مطابق فلسطینیوں اور اسرائیل کے درمیان بامقصد اور تعمیری مذاکرات کی ضرورت پر بھی زور دیا۔انہوں نے کہا کہ فلسطینیوں اور اسرائیل کے درمیان جاری تنازع مشرق وسطیٰ میں امن وامان کیقیام میں رکاوٹ ہے۔ خطے میں امن کیقیام کے لیے مسئلہ فلسطین کا منصفانہ بنیادوں پر حل ہونا ضروری ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں