12

بہترین نتائج کیلئے ’انٹرمٹنگ فاسٹنگ‘ کی سائنس سمجھنا لازمی ہے

بہترین نتائج کیلئے ’انٹرمٹنگ فاسٹنگ‘ کی سائنس سمجھنا لازمی ہے

لمبے وقفے کے بعد کھانا کھانے کو’انٹرمٹنگ فاسٹنگ‘ کہا جاتا ہے جس کے صحت پر بے شمار فوائد مرتب ہوتے ہیں، انٹر مٹنگ فاسٹنگ میں انسان کم وقفے لے کر کھانا پینا چھوڑ دیتا ہے، زیادہ دیر غذا سے پرہیز کرتا ہے جبکہ اس دوران سادے پانی کا استعمال کیا جا سکتا ہے۔

ماہرین کے مطابق  اس ’انٹرمٹنگ فاسٹنگ‘ میں باقاعدگی بہت لازمی ہے، اس عمل کے دوران 16 گھنٹوں کے لیے کھانا چھوڑ کر باقی کے 8 گھنٹوں میں کھانا کھایا جا سکتا ہے، ان 16 گھنٹوں کا آغاز رات 8 سے شروع ہو کر دن  12 بجے تک چلتا ہے جبکہ دن 12 سے رات 8 بجے تک کھانا کھایا جا سکتا ہے۔

انٹرمٹنگ فاسٹنگ اور ماہرین کی رائے:

ماہرینِ غذائیت کے مطابق انٹرمٹنگ فاسٹنگ انسانی صحت کے لیے بے حد فائدہ مند ہے، یہ ایک بہترین عمل ہے جس میں انسانی جسم سے فاضل مادے خارج ہو جاتے ہیں، اعضاء کو سکون ملتا ہے، دماغ تیز کام کرتا ہے اور انسان خود کو ہلکا اور متحرک محسوس کرتا ہے۔

ماہرین کے مطابق انٹر مٹنگ فاسٹنگ کو بے قاعدگی سے کرنے کے برے نتائج  ہوسکتے ہیں جس سے قوت مدافعت، جگر، گردے، بال ، جلد سمیت دیگر اعضاء پر منفی اثرات آ سکتے ہیں۔

ماہرین کے مطابق ’انٹرمٹنگ فاسٹنگ‘ کے کئی طریقے ہیں۔

پہلا طریقہ

غذائی ماہرین کا کہنا ہے کہ وزن کم کرنے کے خواہشمند افراد کے لیے تجویز کیا جاتا ہے کہ صبح ناشتہ کریں، اس کے بعد بھوک لگنے تک کسی غذا کا استعمال نہ کریں، اس دوران 6 سے 8 گھنٹے کا وقفہ لیا جا سکتا ہے۔

دوسرا طریقہ 

دوسرے طریقے کے مطابق دن کا پہلا کھانا دوپہر 12 بجے کھائیں اور دوسرا کھانا شام 4 سے 8 کے درمیان کھا لیں، یہ طریقہ ایک ہفتے تک جاری رکھیں۔

تیسرا طریقہ

تیسرے طریقے کے مطابق 7 دنوں میں سے کسی ایک دن غذا کا استعمال چھوڑ دیں اور دوسرے دن خواتین 500 کیلوریز جبکہ مرد 600 کیلوریز کا استعمال کر سکتے ہیں۔

اس طریقے کے مطابق اب تیسرے دن دوبارہ کھانا چھوڑیں اور چوتھے دن بتائی گئی محدود کیلوریز کا استعمال کریں۔

چوتھا طریقہ

چوتھے طریقے کے مطابق ہفتے میں کسی بھی دو دن 24 گھنٹوں کے لیے غذا کا استعمال چھوڑنا ہے باقی دن کیلوری ڈیفیسیٹ کو مد نظر رکھتے ہوئے کھانا کھانا ہے۔

پانچواں طریقہ

پانچویں طریقے کے مطابق ہفتے کے 7 دنوں میں ایک دن نارمل غذا لیں اور دوسرے دن مکمل 24 گھنٹوں کے لیے روزہ رکھیں یا پھر کچھ کیلوری پر مشتمل غذا کا استعمال کریں۔

چھٹا طریقہ

چھٹے طریقے کے مطابق 7 دنوں کے شام 4 بجے سے 8 بجے کے درمیان ایک کھانا اپنی مرضی سے کھا سکتے ہیں جس میں کیلوریز کی کوئی پابندی نہیں جبکہ صبح 4 سے 12 بجے تک کم مقدار میں سبزیاں اور پھل استعمال کر سکتے ہیں۔

آٹھواں طریقہ

آٹھویں طریقے کے مطابق تینوں وقت کا کھانا کھائیں مگر کیلوریز نہایت کم استعمال کریں، 7 دنوں کے دوران 3 دن میں کسی ایک وقت کا کھانا چھوڑ دیں۔

انٹر مٹنگ فاسٹنگ کے دوران ان غلطیوں سے احتیاط برتیں:

ماہرین کا کہنا ہے کہ انٹرمٹنگ فاسٹنگ کے دوران مثبت نتائج کے لیے مرغن غذاؤں، جنک فوڈ، چینی ، تیل، گھی اور گندم کا استعمال کم کر دیں اور صحت بخش غذاؤں کا استعمال کریں جیسے کہ سبزیاں، پھل، تازہ پھلوں کا جوس، سوپ، مچھلی، مرغی کے سینے کا گوشت وغیرہ۔

انٹر مٹنگ فاسٹنگ کے دوران جب روزے کی حالت میں ہوں تو اس وقت صرف سادہ پانی زیادہ سے زیادہ استعمال کریں اور آرٹیفشل شوگر، مشروبات اور کاربن ڈرنکس سے پرہیز کریں۔

بغیر چینی کی چائے، کافی، بلیک کافی، سبز چائے لے سکتے ہیں۔

کیٹاگری میں : صحت

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں