57

غریب طبقہ کیلئے سرکاری سستے آٹے کی دستیابی خواب بن گئی، آٹا سرعام مہنگے داموں فروخت ہونے لگا

سمبڑیال( آن لائن) غریب متوسط طبقہ کیلئے سمبڑیال شہر و گردونواح میں سرکاری سستے آٹے کی دستیابی’’ خواب‘‘ بن کر رہ گئی ، سہولت بازار بند کیے جانے کے بعد 1ماہ گزرنے کے باوجود سرکاری سطح پر سستا آٹا سیل پوائنٹ قائم نہ کیا جاسکا ، شہری سستے آٹے کے حصول کیلئے دربدر خوار جبکہ مقامی انتظامیہ خاموشتماشائی ، عوام سراپاء احتجاج بن گئے ۔ تفصیلات کے مطابق سمبڑیال شہر اور گردونواح کے تقریباً 150سے زائد مضافاتی علاقوں میں حکومت کی طرف سے غریب اور متوسط طبقے کو ریلیف دینے کیلئے سرکاری سستے آٹے کی دستیابی خواب کی بن گئی

ہے اور سمبڑیال شہر میں قائم اکلوتا سہولت بازار بند کیے جانے بعد تقریباً ایک ماہ سے زائد کا عرصہ گزرنے کے باوجود دیگر شہرو ں میں قائم سستا آٹا سیل پوائنٹ کی طرح سمبڑیال شہر سمیت مضافاتی علاقوں میں انتظامیہ کی طرف سے تاحال کوئی بھی سستا آٹا سیل پوائنٹ قائم نہیں کیا جاسکا اور شہری سرکاری سستے آٹے کے حصول کیلئے خوار ہو رہے ہیں جبکہ عام مارکیٹ میں 20کلو گرام آٹے کا تھیلا 1300روپے تک سرعام فروخت کیا جارہا ہے اور غریب آدمی سرکاری ریلیف 850روپے والا 20کلو گرام آٹے کے تھیلے کی عدم دستیابی کے باعث مہنگا آٹا خرید کر کھانے پر مجبور ہیں شہریوں کا کہنا ہے کہ موجودہ بد ترین مہنگائی کے باعث زندگی پہلے ہی عذاب بنی ہو ئی ہے اور پیٹ بھرنے کیلئے حکومت کی طرف سے سستے آٹے کی صورت میں واحد سہولت تھی وہ بھی دسترس سے باہر ہو گئی ہے سراہاء احتجاج بنے شہریوں نے وزیر اعظم پاکستان عمران خان ، وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار خان سے سمبڑیال میں سستا آٹا سیل پوائنٹ قائم کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں