63

پاکستانیوں نے 25 ہزار اور 40 ہزار والے پرائز بانڈز میں کتنے سو ارب کی سرمایہ کاری کر رکھی تھی؟ حیران کن انکشاف

اسلام آباد (این این آئی)سرمایہ کاروں نے63 ارب روپے کے 25 ہزار روپے والے بانڈ فروخت کردئیے۔خیال رہے کہ حکومت نے گزشتہ سال 10 دسمبر کو 25 ہزار روپے کے نئے پرائزبانڈ کی فروخت پرفوری طور پر پابندی عائد کردی تھی۔ادارہ قومی بچت کے مطابق 25 ہزار والے بانڈز 31 مئی تک کیش کروائے جا سکتے ہیں۔ادارہقومی بچت کے مطابق سرمایہ کاروں نے63 ارب روپے کے 25 ہزار روپے والے بانڈ فروخت کیے، بانڈ بند ہونے کے اعلان کے وقت ان میں 164ارب روپے سرمایہ کاری تھی۔ادارے کے مابق حکومت نے 40 ہزار روپے والے بانڈزپر بھی پابندی لگا رکھی

ہے،40 ہزار والے بانڈز میں 259ارب روپے کی سرمایہ کاری تھی اور اب 40 ہزارروپے والے بانڈز میں سرمایہ کاری کا حجم 1 ارب 80 کروڑ روپے رہ گیا ہے، 40 ہزار والے بانڈز کی رجسٹریشن31 دسمبر تک صرف 21 ارب روپے رہ گئی تھی۔دوسری جانب وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ اب تک ہم ڈھائی سال کے عرصے میں 6 ہزار ارب روپے قرض ادا کرچکے ہیں، اتنے قرضوں کے باوجود معاشی اشاریے مثبت ہونا معجزہ ہے،آغاز سے ہی ہمیں ادراک تھا جب تک ہمارا روپیہ مضبوط نہیں ہوگا حقیقی معنوں میں سرمایہ کاری بھی نہیں آئے گی،روپے کو مستحکم رکھنے میں اسٹیٹ بینک کے روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹ نے اہم کردار ادا کیا جس پر گورنر اسٹیٹ بینک کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں،سمندر پار پاکستانیوں کیلئے جتنی سہولت پیدا کرسکیں اتنی تیزی سے ہماری رقوم میں اضافہ ہوگا،سمندر پار پاکستانی ہمارا سب سے بڑا اثاثہ ہیں،اب تک 90 ممالک میں 88 ہزار روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹس کھل چکے ہیں اگر اسی رفتار سے ہم آگے بڑھتے رہے تو ہماری معیشت کا استحکام بڑھے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں