36

پی آئی اے سے 2 ہزار سے زائد ملازمین رضاکارانہ ریٹائر ہوئے، مظاہرین

پی آئی اے سے رضاکارانہ طور پر ریٹائرمنٹ لینے والے ملازمین سراپا احتجاج بن گئے، کہتے ہیں کہ رضاکارانہ اسکیم کے تحت پی آئی اے سے الگ ہونا مہنگا پڑ گیا، اب نہ تنخواہیں مل رہی ہیں، نہ واجبات، میڈیکل کی سہولت بھی ختم کردی گئی۔

پی آئی اے سے رضاکارانہ اسکیم کے تحت الگ ہونے والے ملازمین نے لاہور پریس کلب کے باہر احتجاج کیا اور ٹریفک بلاک کردی۔

مظاہرین کا کہنا تھا کہ انتظامیہ کی رضاکارانہ اسکیم کے جھانسے میں آگئے، اب رُل رہے ہیں، تنخواہیں، واجبات اور میڈیکل سہولت سمیت کچھ بھی نہیں مل رہا۔

مظاہرین نے بتایا کہ نوبت فاقوں تک آگئی، مطالبات منظور نہ ہوئے تو 2 ہزار ملازمین اور اہلِ خانہ ڈی چوک اسلام آباد جائیں گے، وہ چیف جسٹس سے نوٹس لینے کا مطالبہ کرتے ہیں۔

دوسری طرف پی آئی اے حکام کا کہنا ہے کہ واجبات کی ادائیگیاں آڈٹ رپورٹ آنے کے بعد کی جائیں گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں