30

خدارا پاکستانی حکمران سیاست سے بچوں اور مذہبی تعصب کو دور رکھیں،جمائما گولڈ اسمتھ کی دوہائی

لندن (حالات میڈیا ڈسک) وزیراعظم عمران خان کی سابق بیوی جمائما گولڈ اسمتھ نے سوشل میڈیا سائٹ ٹوئٹر پر لکھا ”میرے بچے یہودیوں کی گود میں پرورش پا رہے ہیں“یہ آج مریم نواز نے کہا۔انہوں نے مزید لکھا کہ میں نے پاکستان میں چھوڑ دیا تھا۔کیونکہ ایک عشرے سے مخصوص میڈیا اور سیاستدانوں کی وجہ سے مذہبی منافرت اور تعصب کا مجھے سامنا تھا۔
ہر ہفتے میرے گھر کے باہر مجھے مارنے کی دھمکی دی جاتی اور میرے گھر کے باہر احتجاجی مظاہرہ بھی کیا جاتا۔مگر آج بھی یہ سب کچھ ہو رہا ہے۔اس میں کوئی شک نہیں کہ سیات بہت ہی گندی گیم ہے۔مگر یہ اتنی گندی صرف پاکستان میں ہے۔کیونکہ یہاں سیاستدان ایک دوسرے کو پچھاڑنے کے لیے ان کے خاندان اور بچوں کو ایکسپوز کرنے میں زیادہ آسانی محسوس کرتے ہیں۔
رواں ہفتے آزاد کشمیر میں ہونیو الی انتخابی مہم کے دوران جلسوں سے سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان اور مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز نے جو کچھ کہا وہ سیاسی روایات اور تہذیب کے خلاف ہے۔ کیونکہ پی ٹی آئی اور ن لیگ کے سیاسی اکابرین اخلاقیات کی حدوں کو پھلانگتے نظر آتے ہیں۔وزیر اعظم عمران خان سابق وزیراعظم نواز شریف کو تنقید کرتے نظر آتے ہیں کہ وہ طبی بنیادوں پر علاج کی غرض سے باہر گئے ا ور اب اپنے پوتے کا پولو میچ انجوائے کر رہے ہیں۔غریب لوگ جیل جاتے ہیں جبکہ امیر لوگوں کو این آر او مل جاتا ہے۔اس کے جواب میں مریم نواز نے جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کو خوب آڑے ہاتھوں لیا۔کہ جنید صفدر نواز شریف کا پوتا ہے وہ یہودیوں کی گود میں نہیں پلا بڑھا۔لہٰذا اب عمران خان اور پھر مریم نواز کی تقاریر کو مدنظر رکھتے ہوئے جمائما گولڈ اسمتھ نے ٹویٹ کرتے ہوئے پاکستانی سیاستدانوں کو بچوں پر تنقید کرنے اور لسانی اور مذہبی عقائد کو تنقید کرنے سے گریز کرنے کا مشورہ دیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں