29

ساہیوال میں ڈاکووں نے 20 ہزار کی رقم دکاندار کو واپس کر دی

ساہیوال (بیورو رپورٹ) : عموماً کسی چوری یا ڈکیتی کے دوران چور یا ڈاکو کے ہاتھ جو بھی لگے وہ سب ل±وٹ کر فرار ہو جاتے ہیں۔ لیکن ساہیوال میں ایک ایسی ڈکیتی بھی ہوئی جہاں 20 ہزار ملنے پر ڈاکووں نے یہ رقم دکاندار کو واپس کر دی لیکن کچھ دیر بعد ہی اگلی دکان پر ڈکیتی میں انہیں 5 لاکھ روپے مل گئے جو وہ لوٹ کر فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے۔
تفصیلات کے مطابق ساہیوال کے شہر دیپال پور میں واقع جھال روڈ پر مسلح افراد ایک دکان میں داخل ہوئے اور مالک کو یرغمال بنا کر پیسے دینے کا مطالبہ کیا۔ دکان مالک نے ملزمان کو بیس ہزار روپے نقد رقم دی تو انہوں نے اسے کم کہہ کر پیسے واپس دکاندار کو دیے۔ ڈاکوو¿ں کا کہنا تھا کہ یہ کم رقم ہے، ہم ہزاروں نہیں لاکھوں ل±وٹنے والے ہیں اور وہاں سے چلے گئے۔

لیکن کچھ دیر بعد ہی ڈاکو دیپالپور کے ایک ڈیپارٹمنٹل اسٹور میں داخل ہوئے، جہاں سے پانچ لاکھ روپے ل±وٹ کر فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے۔ پولیس نے سی سی ٹی وی فوٹیج حاصل کر لی ہے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ سی سی ٹی وی فوٹیج کی مدد سے ہی معلوم ہوا کہ دونوں وارداتوں میں ایک ہی گروپ ملوث ہے، جس نے کم رقم چھوڑ کر لاکھوں روپے ل±وٹے۔
یاد رہے کہ گذشتہ روز بھی ماموں کانجن کا رہائشی زاہد رفیق اپنی بیٹی کو موٹرسائیکل پرکالج چھوڑنے جارہاتھا کہ اس دوران تھانہ رجانہ کی حدود میں لنڈو پل کے قریب 3 ڈاکوو?ں نے اس سے موٹر سائیکل ، 2 ہزارنقدی اور موبائل فون چھین لیا تاہم اس کی بیٹی سے لیپ ٹاپ اورموبائل فون نہ چھینا ، جب ڈاکو جانے لگے تو طالبہ نے ان سے کہا کہ انکل میرے والد سے ا?پ نے جو 2 ہزار روپے چھینے ہیں وہ میری کالج کی فیس ہے ، پلیز واپس کردیں ، اس پرڈاکوو?ں نے طالبہ کے والد سے چھینی گئی اس کی کالج کی فیس واپس کر دی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں