61

لاہور میں خون سفید ہو گیا، جائیداد کی خاطر بیٹوں نے باپ کو اغوا کر لیا

لاہور (بیورو رپورٹ) جائیداد کی لالچ میں بیٹوں کا خون سفید ہو گیا،لاہور میں بیٹوں نے جائیداد ہتھیانے کیلئے بزرگ باپ کو اغوا کر کے بہمانہ تشدد کا نشانہ بنا ڈالا۔ تفصیلات کے مطابق جائیداد کی لالچ میں بیٹوں نے والد جیسے قابل احترام رشتے کا ذرا بھی لحاظ نہ کیا اور جائیداد لینے کے لیے والد کو ہی ساتھیوں سے اغوا کروا دیا۔
پولیس کے مطابق جائیداد کی خاطر بیٹوں نے بات کو ساتھیوں کی مدد سے اغوا کیا اور قریبی مکان لے جا کر تشدد کا نشانہ بنایا۔ترجمان ڈولفن پولیس کا کہنا ہے کہ ہمسائے نے 15پر کال کر کے اغوا کی اطلاع دی تو ڈولفن پولیس نے اغواکاروں کو گرفتار کر کے باپ کو بازیاب کرا لیا۔ترجمان نے بتایا کہ اغواکار جاوید، جنید اور سجاد کو تھانہ رائیونڈ پولیس کےحوالےکر دیا گیا ہے ?اور ان سے تفتیش کی جارہی ہے۔
اس سے قبل اوکاڑہ میں بھی ایسا ہی افسوسناک واقعہ پیش ا?یا تھا۔ کچھ عرصہ قبل اوکاڑہ کے نواحی گاوءں 48 تھری ا?ر میں بدبخت بیٹے نے باپ اور سوتیلی ماں کو قتل کردیا تھا۔ ملزم واردات کے بعد فرار ہونے میں کامیاب ہوگیا، جب کہ پولیس نے ملزم کی گرفتاری کے لیے چھاپے مارنے شروع کر دئیے تھے۔پولیس حکام نے بتایا کہ مقتول محمد یاسین نامی شخص نے کچھ عرصہ قبل ارشاد بی بی عرف شادو سے دوسری شادی کرلی تھی، ملزم مقصود اپنے باپ یاسین سے جائیداد کا حصہ مانگتا تھا، جائیداد کا تنازعہ شدت اختیار کرگیا تو ملزم نے طیش میں ا?کر والد اور سوتیلی ماں کو فائرنگ کر کے قتل کردیا، پولیس نے دونوں لاشوں کو اپنی تحویل میں لے کر پوسٹ مارٹم کے لیے اسپتال منتقل کردیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں