19

مجھے اڈیالہ جیل موت کی چکی میں قید رکھا گیا: احسن اقبال

مجھے اڈیالہ جیل موت کی چکی میں قید رکھا گیا: احسن اقبال

مسلم لیگ نون کے سیکریٹری جنرل احسن اقبال کا کہنا ہے کہ نارووال اسپورٹس سٹی جیسے شاندار منصوبے پر مجھے اڈیالہ جیل موت کی چکی میں قید رکھا گیا۔

اسپورٹس سٹی نارووال میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مسلم لیگ نون کے سیکریٹری جنرل احسن اقبال نے کہا کہ اسلام آباد ہائی کورٹ کے فیصلے میں لکھا ہے کہ اسپورٹس سٹی منصوبہ مفادِ عامہ کا تھا۔

انہوں نے کہا کہ اس منصوبے کی بنیاد پر میرے خلاف جھوٹا اور بھونڈا ریفرنس بنایا گیا، حکومت نے اس قومی نوعیت کے منصوبے کو سیاسی انتقام کا نشانہ بنایا۔

احسن اقبال کا کہنا ہے کہ یہ کہا گیا کہ اس منصوبے پر 6 ارب ضائع کیئے گئے، حالانکہ یہ منصوبہ 2 اعشاریہ 9 ارب کا تھا، حکومت کی طرف سے بھونڈے الزامات لگا کر اس منصوبے کو اسکینڈلائز کیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ اس حکومت نے بہترین منصوبے کو 3 سال میں بھوت بنگلہ بنا دیا ہے، کیا اس جدید منصوبے کو بنانا جرم تھا یا اسے برباد کرنا جرم ہے؟

نون لیگی رہنما نے کہا کہ الزام صرف یہ ہے کہ منصوبہ نارووال میں کیوں بنا، کیا نارووال بھارت میں ہے؟ انتقامی کارروائیوں کے لیے یہ نیب اس حکومت کا آلہ کار بنا ہوا ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ یہ اسپورٹس سٹی میرا گناہ نہیں میرا اعزاز ہے، میرا بس چلے تو پورے پاکستان میں درجنوں ایسے منصوبے بناؤں۔

احسن اقبال کا مزید کہنا ہے کہ اب اسپورٹس سٹی پر جو اضافی پیسے خرچ ہوں گے اس کی ریکوری عمران نیازی سے کی جائے گی۔

مسلم لیگ نون کے سیکریٹری جنرل کا یہ بھی کہنا ہے کہ اس شاندار منصوبے کو برباد کرنے پر عمران نیازی کے خلاف مقدمہ چلے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں