32

مفتی تقی عثمانی پر حملے کا مقدمہ درج، مشکوک شخص باقاعدہ گرفتار

مفتی تقی عثمانی پر حملے کا مقدمہ درج، مشکوک شخص باقاعدہ گرفتار

معروف عالم دین مفتی تقی عثمانی پر حملے کا مقدمہ درج کرکے ملنے کے لئے آنے والے مشکوک شخص کو باقاعدہ گرفتار کرلیا گیا ، مشکوک شخص سے تلاشی کے دوران تیز دھار آلہ برآمد ہوا تھا۔

پولیس کے مطابق عاصم نامی مشکوک شخص کو باقاعدہ گرفتار کرکے اس کے خلاف عوامی کالونی تھانے میں سرکاری مدعیت میں اقدام قتل کا مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔

ایس ایس پی کورنگی شاہ جہان نے جیونیوز کو بتایا کہ گلستان جوہر کے رہائشی عاصم لئیق نے فجر کی نماز کے بعد مفتی تقی عثمانی سے ملاقات کی اجازت مانگی تھی۔

ملزم کا کہنا ہے کہ گھریلو جھگڑے سے پریشان ہو کر دعا کرانے آیا تھا، اسی دوران مفتی تقی عثمانی کے گارڈز نے مشکوک شخص کی تلاشی لی تو اس کی جیب سے چاقو برآمد ہوا۔

واقعہ کی اطلاع ملتے ہی رینجرز اور پولیس کی نفری موقع پر پہنچ گئی اور مشتبہ شخص کو حراست میں لے کر چاقو تحویل میں لے لیا، جبکہ ملزم سے تلاشی کے دوران چاکلیٹ اور نئے کپڑے بھی ملے ہیں پولیس کی مزید تفتیش جاری ہے۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ چاقو پر زہر یا کسی اور مادے کی موجودگی کیلئے لیب بھیجا جائے گا، رپورٹ کے بعد مزید قانونی کارروائی کا تعین کیا جائیگا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں