31

اداکارہ نادیہ حسین کی ملازمہ کو جھاڑ پلانے کی ویڈیو کا ڈراپ سین ہو گیا

کراچی (میڈیا ڈسک) اداکارہ اور ماڈل نادیہ حسین نے اپنی وائرل ہونے والی ویڈیو پر وضاحت پیش کر دی۔اداکارہ نے بتایا کہ یہ ایک برانڈ کی پیڈ کمپین تھی جب کہ برانڈ کا نام جلد بتا دیا جائے۔نادیہ حسین نے کہا کہ میں ایک چیز واضح کرنا چاہتی ہوں کہ اپنی ملازمہ یا کام کرنے والے اسٹاف کو ڈانٹنے میں کوئی مسئلہ نہیں ہونا چاہیے، خاص طور پر ایسی لاپروائی پر جب بجلی کے حوالے سے کوئی خطرہ ہو۔انہوں نے کہا کہ اس معاملے میں تھوڑا سا ڈانٹ لینا چاہیے تاکہ ان کو آگاہی مل سکے۔میں اس قسم کی لاپرواہی دیکھتی ہوں تو ضرور ڈانٹ دیتی ہوں۔واضح رہے کہ اداکارہ و ماڈل نادیہ حسین کی اپنی ملازمہ کو جھاڑ پلانے کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی تھی۔نادیہ حسین کی ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی جس میں وہ اپنی ملازمہ کو بہت بری طرح سے ڈانٹ رہی ہیں۔ویڈیو میں دیکھا جاسکتا تھا کہ نادیہ حسین اپنی ملازمہ سے کہہ رہی ہیں کتنی بار تمہیں سمجھایا ہے کہ جب بجلی جھٹکے مارے تو پیچھے سے مین سوئچ ا?ف کردیا کرو لیکن تم ہر وقت موبائل میں لگی رہتی ہو۔نادیہ حسین ملازمہ کو ڈانٹتے ہوئے مزید کہہ رہی ہیں کہ مہینے میں دوسری بار میری مشین جلی ہے صرف تمہاری وجہ سے۔ اس کے علاوہ نادیہ اپنی ملازمہ کو بجلی کا زیادہ بل آنے پر بھی ڈانٹتی ہوئی نظر آئیں۔اور کوئی تیسرا شخص دروازے کے پیچھے سے ان کی یہ ویڈیو بنارہا ہے۔مختلف سوشل میڈیا پلیٹ فارمز پر اداکارہ نادیہ حسین کے ملازمہ کے ساتھ کیے جانے والے اس سلوک کی مذمت کی جارہی ہے۔ سوشل میڈیا پر بھی لوگ ویڈیو پر تبصرے کرتے ہوئے نادیہ حسین کو ملازمہ کے ساتھ اس طرح بات کرنے پر تنقید کا نشانہ بنارہے ہیں۔لیکن کچھ صارفین نادیہ حسین کے حق میں بھی بولتے ہوئے نظر آئے اور کہا کہ ملازمہ کی غلطی ہے جب اسے کہا گیا ہے کہ گھر کی چیزوں پر دھیان دو تو اس کا دھیان گھر کے بجائے موبائل پر ہے۔
غلطی پر ہی ڈانٹ پڑتی ہے۔ ایک اور صارف نے لکھا کام والی ملازمائیں بھی بہت تنگ کرتی ہیں۔تاہم سوشل میڈیا پر بہت سے لوگ اس ویڈیو کو جعلی قرار دیتے ہوئے کہہ رہے ہیں کہ یہ حقیقت نہیں بلکہ کسی ڈرامے کی شوٹنگ کا منظر لگ رہا ہے۔ دوسری جانب نادیہ حسین کی جانب سے ابھی تک اس وائرل ویڈیو کے حوالے سے کوئی بیان سامنے نہیں آیا ہے کہ یہ ویڈیو اصلی ہے یا ڈرامے کی شوٹنگ کا کوئی منظر۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں