ٹک ٹاک بنانے کے بہانے دو بھائیوں کو زیادتی کا نشانہ بنا دیا گیا

دادو ( حالات میڈیا رپورٹ) ٹک ٹاک بنانے کے بہانے دو بھائیوں کو زیادتی کا نشانہ بنا دیا گیا۔تفصیلات کے مطابق دادو میں ایک انتہائی شرمناک اور افسوسناک واقعہ پیش آیا ہے جہاں پر دو بھائیوں کو زیادتی کا نشانہ بنایا گیا، ملزمان نے ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل کر دی۔بتایا گیا ہے کہ تھانہ ٹنڈو رحیم کے علاقے میں دو کمسن بھائیوں کو ملزمان نے ٹک ٹاک بنانے کے بہانے جابلوں علاقے میں لے جاکر مبینہ جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا تھا،زیادتی کے بعد ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل کر دی۔
بچوں کے ورثا کا احتجاج جاری ہے،پولیس نے بچوں کا میڈیکل کروانے کے بعد مقدمہ درج کر لیا ہے جب کہ ایک ملزم کو گرفتار بھی کیا گیا تاہم مرکزی ملزم فرار ہے۔پولیس نے بتایا ہے کہ متاثرہ بچوں کے بھائی کی مدعیت میں دو ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا۔
متاثرہ بچوں کا اسپتال سے میڈیکل چیک کرا لیا گیا۔درج مقدمہ میں ملزم خالد جمالی اور زاھد لاشاری نامزد ہیں، جبکہ پولیس نے ایک ملزم کو دھر لیا دوسرا تاحال ہاتھ نہ لگ سکا۔

واقعہ کا مقدمہ درج کر کے تفتیش شروع کر دی۔دوسری جانب گردو نواح میں جنسی تشدد کے دو مختلف واقعات میں ایک بچے کو زیادتی کا نشانہ بنا دیا جبکہ دوسرے کے شور مچانے پر ملزمان موقع سے فرار ہو گئے۔ ویرکے کی رہائشی عشرت بی بی نے پولیس تھانہ کنگن پور میں درخواست دی ہے کہ میرا چھ، سات سالہ بیٹا علی شان گھر سے باہر کھیل رہا تھا ملزم زین ا?یا اور اسے ورغلائ پھسلائ کر اس کے ساتھ بدفعلی کی ہے۔
پولیس تھانہ کنگن پور مصروف کاروائی ہے جبکہ واں کھارا کے رہائشی سید رسول نے پولیس تھانہ چھانگا مانگا میں درخواست دی ہے کہ میر بیٹا حسن علی گھر کے باہر کھڑا تھا کہ ملزمان اسد،عدنااور انتظار ا?ئے اور میرے بیٹے سے بدفعلی کرنے کی کوشش کی میرے بیٹے کے شور مچانے پر فرار ہوگئے پولیس تھانہ چھانگا مانگا مصروف کاروائی ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں