خوشاب : جعلی خاتون پولیس افسر ساتھی سمیت اصلی پولیس کے ہتھے چڑھ گئی

خوشاب (حالات بیورو رپورٹ) صوبہ پنجاب کے ضلع خوشاب کے علاقے جوہر ا?باد سے جعلی خاتون پولیس افسر اور اس کے ساتھی کو گرفتار کرلیا گیا ، گرفتاری کے وقت خاتون نے سب انسپکٹر عہدے کی یونیفارم پہن رکھی تھی۔ تفصیلات کے مطابق تھانہ سٹی جوہر ا?باد پولیس نے الفت کالونی میں چھاپہ مار کر جعلی خاتون پولیس افسر نسرین اور اس کے ساتھی غضنفر کو گرفتار کیا جہاں خاتون نے قحبہ خانہ بنایا ہوا تھا ، گرفتاری کے بعد خاتون کے پرس کی تلاشی لی گئی تو اس میں سے متعدد پولیس افسران کے عہدوں کے رینک برا?مد ہوئے ، گرفتار کیے جانے کے بعد جعلساز خاتون اور اس کے ساتھی غضنفر کے خلاف پولیس نے مقدمہ درج کرلیا۔
اس سے پہلے صوبہ پنجاب کے شہر چنیوٹ میں شہریوں سے فراڈ کرنے والا جعلی پولیس اہلکار اصلی پولیس کے ہتھے چڑھ گیا ، پولیس کی جانب سے چنیوٹ کے علاقے احمد نگر میں کارروائی عمل میں لائی گئی ، جس کے نتیجے میں ایک جعلی پولیس اہلکار کو گرفتار کیا گیا ، ملزم خود کو پولیس اہلکار ظاہر کر کے شہریوں سے فراڈ کی متعدد وارداتوں میں ملوث ہے ، اس مقصد کے لیے بنائی گئی پولیس یونیفارم بھی ملزم کے قبضے سے برا?مد ہوئی ، گرفتاری کے بعد پولیس نے ملزم کے خلاف جعل سازی کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کر لیا۔
دوسری طرف بھارتی اداکار فیروز جعفری کو لاک ڈاﺅن کے دوران جعلی پولیس افسر بن کر شہریوں کو لوٹنے پر گرفتار کرلیا گیا ، ممبئی کرائم برانچ کے مطابق ٹی وی اداکار فیروز جعفری نے بھارت کی مختلف ریاستوں میں بزرگ شہریوں کو دھوکہ دہی اور فراڈ کے ذریعے لوٹا ہے تاہم 64 سالہ خاتون کی شکایت پر انہیں دھر لیا گیا ، گرفتاری کے بعد ٹی وی اداکار نے تفتیش میں انکشاف کیا کہ کورونا میں لاک ڈاﺅن کے دوران کام نہیں تھا لہٰذا پیٹ پوجا کے لیے یہی کام سب سے آسان لگا۔
خاتون نے شکایت درج کرائی کہ ملزم فیروز خان نے پولیس افسر کی حیثیت سے ملاقات کی اور تحقیقات کا کہہ کر سارے زیورات اتروالیے اور انہیں اخبار میں لپیٹ کر اپنے پاس رکھ لیا تاہم کچھ دیر تک باتوں میں الجھانے کے بعد جب اخبار واپس کیا تو اس میں پتھر موجود تھے ، خاتون کی درخواست پر پولیس نے مقدمہ درج کرکے سی سی ٹی وی فوٹیج کی مدد سے ملزم کی شناخت کی اور اسے ممبئی کے علاقے اندھیری ویسٹ سے گرفتار کرلیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں