رنگ روڈ اسکینڈل سے زلفی بخاری کا تعلق نہیں،ان کے ننھیال کوفائدہ پہنچتا ہے

اسلام آباد (اسٹاف رپورٹر) وفاقی وزیر اطلاعات فواد چودھری نے کہا ہے کہ رنگ روڈ اسکینڈل سے زلفی بخاری کا تعلق نہیں،ان کے ننھیال کوفائدہ پہنچتا ہے، کسی حکومتی وزیریا مشیر کے ملوث ہونے کا کوئی ثبوت نہیں ملا، منصوبے کی انکوائری سے اربوں روپے بچائے گئے۔ انہوں نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ راولپنڈی رنگ روڈ اسکینڈل کی ابتدائی تحقیقات میں کسی وزیر اور مشیر کے ملوث ہونے کے ثبوت نہیں ملے، زلفی بخاری کا رنگ روڈ اسکینڈل سے کوئی تعلق نہیں، ان کے ننھیال کوفائدہ پہنچتا ہے، زلفی بخاری نے استعفیٰ منصوبے کی شفاف انکوائری اور تحقیقات مکمل ہونے تک کیلئے دیا ہے۔
ابتدائی تحقیقات میں معلوم ہوا کہ کرپشن اسکینڈ ل میں سابق کمشنر راولپنڈی اور ان کے مزید ساتھی افسران ملوث تھے۔
انکوائری کا معاملہ متعلقہ اداروں کو بھیجا گیا ہے۔ فواد چودھری نے ٹویٹر پر اپنے ٹویٹ میں کہا کہ عمران خان کی حکومت میں ہی ہو سکتا تھا کہ اگر الزامات لگیں تو تحقیقات ہوتی ہیں نون لیگ اور پیپلز پارٹی کےدور میں میڈیا کےگلے بیٹھ جاتے تھےلیکن مجال ہے کان پر جوں بھی رینگے، یہ ہی نظام میں تبدیلی ہے حکومتی اھلکاروں کو احتساب کا خوف ہونا چاہئے طاقتور ترین لوگ بھی قانون سے مبرائ نہیں۔

کمشنر نے ابتداءتحقیقات میں ان اطلاعات کی تصدیق کی ان کی ابتداءرپورٹ کے مطابق سابق کمشنر راولپنڈی اور ان کے ساتھ مزید افسران اس اسکینڈل میں شریک تھے مزید تحقیقات کیلئے معاملہ متعلقہ اداروں کو بھیجا جائے، ابھی تک اس معاملے میں کسی وزیر یا مشیر کے ملوث ہونے کا کوءثبوت نہیں ملا۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان کی احتساب پالیسی واضع ہے تمام شہری قانون کی نظر میں برابر ہیں اب چاہے وہ اپوزیشن کے رہنما ہوں یا کابینہ کے رکن افسر شاہی سے تعلق رکھتے ہوں یا کسی بھی ادارے سے،الزامات لگیں گےتو تحقیقات ہوں گی اور جوابدہی کا اصول لاگو ہو گا۔ یہی نظام کی تبدیلی ہے جس کا وعدہ تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں