42

باپ نے عید شاپنگ کے بہانے لے جاکر 4 بچوں کو نہر میں پھینک دیا

فیصل آباد ( حالات بیورو رپورٹ) باپ نے عید شاپنگ کے بہانے لے جاکر چار بچوں کو نہر میں پھینک دیا۔تفصیلات کے مطابق فیصل آباد میں ایک انتہائی افسوسناک واقعہ پیش آیا ہے جہاں پر غربت کے ہاتھوں مجبور ہو کر باپ نے اپنے ہی چار بچوں کو موت کے منہ میں جھونک دیا۔بنڈالہ میں غربت سے تنگ باپ نے چار بچے نہر میں پھینک کر مار ڈالے۔پولیس کا کہنا ہے کہ ملزم غربت کے باعث بچوں کو عید کے کپڑے نہ بنا سکا تو چار روز قبل عید شاپنگ کے بہانے بچوں کو لے گیا اور تین بیٹیوں سمیت ایک بیٹے کو نہر میں پھینک دیا۔
ملزم نے واپسی پر بچوں کو لاہور میں رشتے دار کے گھر چھوڑنے کا ڈرامہ کیا تھا ہم بیوی کے تھانے میں درخواست دینے پر ملزم کو حراست میں لے لیا گیا ہے۔تفتیش کے دوران ملزم نے بچے نہر میں پھینک کر مارنے کا اعتراف کر لیا۔
پولیس کا کہنا ہے کہ ملزم کی نشاندہی پر بھکھی نہر میں بچوں کی لاشوں کی تلاش جاری ہے۔خیال رہے کہ چند روز قبل میانوالی میں سنگدل باپ نے فائرنگ کر کی3 بیٹیوں کو قتل کردیا ہے۔
ابتدائی معلومات کے مطابق بیٹا پیدا نہ ہونے پر گھر میں جھگڑا رہتا تھا۔پولیس کے مطابق بچیوں کی عمریں ڈیڑھ سے 4 سال کے درمیان تھیں۔ ملزم کو بیٹا پیدا نہ ہونے کا رنج تھا، اس لیے گھر میں جھگڑے رہتے تھے۔ تھانہ داﺅدخیل پولیس کے مطابق ملزم نادر خان نے گھریلو جھگڑے پردو سالہ عائشہ، تین سالہ علیشہ اور چار سالہ عارفہ پر فائرنگ کی۔ عائشہ اور علیشہ موقع پر جاں بحق ہوگئیں جبکہ چار سالہ عارفہ ہسپتال پہنچنے کے بعد دم توڑ گئی۔ تینوں بچیوں کی نماز جنازہ داو¿د خیل میں ادا کی گئی جس میں لوگوں کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔پولیس کے مطابق بچیوں کی فائرنگ سے موت کے بعد باپ کو گرفتار کرلیا گیا ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں